پشاور ہائیکورٹ کا فون بلاک نہ کرنے کا فیصلہ

پاکستان ٹیلی کوم اتھارٹی (پی ٹی اے) کی جانب سےموبائل فون بلاک ہونے کا معاملہ، پشاور ہائیکورٹ نے بڑا فیصلہ سنا دیا
میرپور (اڑان نیوز )ملک بھر میں پاکستان ٹیلی کوم اتھارٹی (پی ٹی اے) نے غیر قانونی طور پر پاکستان لائے گئے موبائل فونز کو بند کرنا شروع کر دیا ہے، ڈھائی کروڑ میں سے پہلے مرحلے میں30 لاکھ موبائل فون بلاک کئے جانے کا اعلان کیا گیا تھا جس پر عمل درآمد شروع کر دیا گیا ہے ۔
تفصیلات کے مطابق پاکستان بھر میں گزشتہ کئی سالوں سے موبائل فونز کسٹم ڈیوٹی اور دیگر ٹیکسز کے بغیر اسمگلنگ کے ذریعے لائے گئے تھے، تاہم اب آنے والے موبائل فونز کے اعدادوشمار کو تمام موبائل فون نیٹ ورک پر اکٹھا کرنے کے بعد موبائل فون کو بند کرنے کا سلسلہ شروع ہو گیا ہے۔پاکستان ٹیلی کام اتھارٹی کے ذمہ دار ذرائع نے بتایا کہ بذریعہ میڈیا اور سوشل میڈیا کے ذریعے عوام کو گزشتہ کئی مہینے پہلے سے آگاہ کیا جاتا رہا کہ موبائل فون کی تصدیق بذریعہ شارٹ کوڈ کے ذریعے کریں، تصدیق نہ ہونے کی وجہ سے 30لاکھ سے زائد موبائل فون بند ہونے شروع ہوگئے ہیں ۔ جس پر پشاور ہائی کورٹ نے طور گل سمیت دیگر 7 درخواست گزاروں کی درخواست پر بڑا فیصلہ سنا دیا ۔ پشاور ہائی کورٹ کے فیصلے کے مطابق پاکستان ٹیلی کام اتھارٹی (پی ٹی اے) فریقین کے ساتھ بیٹھ کر اس مسئلے کا حل نکالے تب تک کوئی بھی فون بلاک نہ کیا جائے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں