عوامی دلچسپی کے تمام منصوبہ جات ترجیحی بنیادوں پر مکمل کیے جائیں گے،طارق فاروق

عوامی دلچسپی کے تمام منصوبہ جات ترجیحی بنیادوں پر مکمل کیے جائیں گے،طارق فاروق
مظفرآباد (پی آئی ڈی) آزادکشمیر کے سینئر وزیر و وزیر فزیکل پلاننگ و ہاؤسنگ چوہدری طارق فاروق نے کہا ہے کہ مظفرآباد شہر میں سیوریج کے نظام کی بہتری کے لیے اقداما ت کیے جا رہے ہیں تاکہ شہر کے اندر رہائش پذیر لوگوں کو ان مسائل سے نجات دلائی جا سکے۔ سیوریج کے مسائل کے حل کے لیے 41.978ملین روپے کے ترقیاتی پیکج کی منظوری کی گئی جس کے تحت جدید مشنری خرید لی گئی ہے۔ مظفرآباد قدیم اور گنجان آباد شہر ہے جس میں سیوریج کے مسائل میں بے پناہ اضافہ ہو چکا ہے۔ اس ترقیاتی پیکج کے تحت مظفرآباد شہر میں سیوریج کے مسائل کم ہو نگے۔ محکمہ فزیکل پلاننگ و ہاؤسنگ کیپیٹل سٹی کی ضروریات کو پورا کرے اور 1122کے ساتھ مل کر کام کرے۔ محکمہ کے آفیسران اور سٹاف عوام کے ساتھ اپنے رویے بہتر رکھیں تاکہ ان کے مسائل حل کیے جا سکیں۔ اپنے اہداف کے بروقت حصول کو یقینی بنا یا جائے۔ ان خیا لات کا اظہار انہوں نے بدھ کے روز یہاں دارالحکومت مظفرآباد میں سالانہ ترقیاتی پروگرام کے تحت ”خرید مشینری برائے صفائی مظفرآباد سینٹر“ کے تحت خرید کی گئی جدید یورپین سٹینڈرڈ کی مشنری کا معائنہ کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر ایکسیئن پبلک ہیلتھ امجد راٹھور نے سینئر وزیر کومنصوبہ کے حوالہ سے بریفنگ دی جبکہ چیف انجینئر فزیکل پلاننگ و ہاؤسنگ عبد الباسط، ڈپٹی ڈائریکٹر اطلاعات محمد بشیر مرزا اور دیگر سٹاف بھی اس موقع پر موجود تھا۔ سینئر وزیر نے اس موقع پر محکمہ پبلک ہیلتھ کی کارکردگی کو سراہتے ہوئے کہا کہ اس منصوبہ سے مظفرآباد شہر کے سیوریج کے مسائل حل ہو سکیں گے۔ جو شہریوں کا دیرینہ مطالبہ تھا۔ انہوں نے کہا کہ عوامی دلچسپی کے تمام منصوبہ جات ترجیحی بنیادوں پر مکمل کیے جائیں گے۔ سیوریج کے نظام کی بہتری مظفرآباد شہر کے عوام کا دیرینہ مطالبہ تھا جسے پورا کرنے کے لیے جدید مشینری خرید کی گئی ہے تاکہ سیوریج کے مسائل حل ہو سکیں اور شہر میں صاف ماحول میسر ہو۔ انہوں نے کہا کہ محکمہ پبلک ہیلتھ کا سٹاف شہریوں کے ساتھ اپنا رویہ بہتر بنائے اور ان کے مسائل حل کرنے کے لیے اقدامات کرے۔جو بھی شہری شکایت کرے اس کی شکایت کا فوری طور پر ازالہ کیا جائے تاکہ شہریوں کا اعتماد محکمہ پر بحال ہو۔ ہم سب کی ذمہ داری ہے کہ ہم عوامی مسائل حل کریں۔ انہوں نے کہا کہ سیوریج کے مسائل کے حل کے لیے سٹاف کو ٹریننگ بھی دی گئی ہے۔ محکمہ سٹاف کی حفاظت کے لیے بھی اقدامات کرے اور اس بات کو یقینی بنایا جائے کہ اس ترقیاتی اسکیم کو شفاف انداز میں پایہ تکمیل تک پہنچایا جا ئے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں