اعجاز احمد میرسماجی راہنما میرپور نے کہا کہ ایک طرف کرونا وائرس نے پوری دنیا میں خوف وہراس پھیلا رکھا ہے

میرپور( ) اعجاز احمد میرسماجی راہنما میرپور نے کہا کہ ایک طرف کرونا وائرس نے پوری دنیا میں خوف وہراس پھیلا رکھا ہے اللہ تعالیٰ ہمیں اس وائرس سے محفوظ رکھے جبکہ دوسری طرف میرپور دشمن حکومتی ٹولے اور قبضہ مافیا کے سرغنہ طاہر مرزا المعروف مرزا پتو ایڈمنسٹریٹر بلدیہ میرپور اور اُس کے ماتحت چند رشوت خور آفیسران بھاری نذرانے لیکر چیف جسٹس سپریم کورٹ کے حکم کو نظر انداز اور توہین عدالت کرتے ہوئے قبضے گرانے کی بجائے ہر سیکٹر نئے قبضے کروانے میں مصروف ومگن ہیں میرپور کو کھنڈرات بنانے میں نا اہل سابق ایم ایل اے چوہدری سعید اور نالائق طاہرمرزاایڈمنسٹریٹر میونسپل کارپوریشن کا بہت بڑا ہاتھ ہے پچھلے چار سالوں سے تارکین وطن و دو بار قربانیاں دینے والے شہریوں اور رشوت خوروں کے منی لندن کی تمام مین سڑکیں اثار قدیمہ کا منظر پیش کر رہی ہیں ایک سازش کے تحت پچھلے پندرہ سالوں سے میرپور میں کوئی ترقیاتی منصوبہ مکمل نہ کیا گیا ہے جبکہ پی ایم یو والے بھی میرپور دشمنوں کی صف میں آگے آگے ہیں جہاں بھی اُنہوں نے گٹر لائنیں پچھائی ہیں وہاں سے اپنی باقیات کو اُٹھانا تو درکنار علامہ اقبال روڈ کنارے جگہ جگہ کھڈے بنا دیئے ہیں جو نہ صرف قیمتی گاڑیوں کیلئے بلکہ پیدل چلنے والے انسانوں کیلئے بھی نقصان کا باعث بن رہے ہیں مگر افسوس ضلعی انتظامیہ نے بھی میرپور دشمن حکومتی ٹولے کے ساتھ اپنے آنکھیں بند کر رکھی ہیں صحافیوں سے باتیں کرتے ہوئے اعجاز احمد میر نے مزید کہا کہ اگر راجہ فاروق حیدر وزیراعظم آزاد کشمیر میرپوریوں کیساتھ ذرا بھر بھی مخلص ہیں تو قبضہ مافیا کیخلاف کھلی کچہری لگانے کے احکامات صادر کریں بلدیہ کے ذمہ داران مفاد عامہ کے رقبوں اور نہ ہی اپنے ادارہ کیساتھ مخلص ہیں میرپور شہر کے ہر سیکٹر میں بھاری نذرانے لیکر سر عام قبضے کروا کر اپنی تنخواہ کو رشوت کیساتھ ملا کر حرام کھا رہے ہیں قبضہ مافیا طاہر مرزا المعروف مرزا پتو اور رشوت خور آفیسران کیخلاف سیکرٹری لوکل گورنمنٹ بورڈنے انکوائری کمیٹی قائم کر کے اچھا قدم اُٹھایا ہے ان رشوت خور میرپور شمنوں کو ننگا کرنے کیلئے کھلی کچہری لگانا وقت کی اہم ضرورت ہے بار بار قبضے کروا کر کروڑوں روپے رشوت لینے اور پھر بار بار میرپور کی قیمتی املاک کو اجھاڑنے والوں کیخلاف سخت ترین کاروائی ہونی چاہیے اور مجرم ثابت ہونے پر ان کو چوک شہیداں میں منہ کالا کر کے الٹا لٹکایا جائے تاکہ آئندہ کوئی رشوت خور میرپور دشمنی نہ کر سکے، جاگ میرپور ی جاگ۔

[X]

اپنا تبصرہ بھیجیں